تاجکستان

جمہوریہ تاجکستان (تاجک: جمہوری توجکستون) وسط ایشیا کا ایک خشکی میں گھرا ہوا (landlocked) ملک ہے۔ اس کی سرحدیں جنوب میں افغانستان، مغرب میں ازبکستان، شمال میں کرغزستان اور مشرق میں چین سے ملتی ہیں۔ یہ تاجک نسل کے باشندوں کا وطن ہے، جن کی ثقافتی و تاریخی جڑیں ایران میں پیوست ہیں اور یہ فارسی سے انتہائی قربت رکھنے والی زبان تاجک بولتے ہیں۔ سامانی سلطنت کا گہوارہ رہنے والی یہ سرزمین 20 ویں صدی میں سوویت اتحاد کی باضابطہ جمہوریہ رہی جسے تاجک سوویت اشتراکی جمہوریہ (Tajik Soviet Socialist Republic) کہا جاتا تھا۔

  

تاجکستان
پرچم نشان

 

ترانہ:سرود ملی تاجکستان  
زمین و آبادی
متناسقات 38.583333°N 71.366667°E / 38.583333; 71.366667  
بلند مقام کوہ اسماعیل سامانی  
پست مقام دریائے سیحوں (300 میٹر ) 
رقبہ 143100.0 مربع کلومیٹر  
دارالحکومت دوشنبہ  
سرکاری زبان تاجک زبان  
آبادی 8921343 (2017) 
اوسط عمر
65.053 سال (1999)
65.485 سال (2000)
65.894 سال (2001)
66.303 سال (2002)
66.727 سال (2003)
67.163 سال (2004)
67.607 سال (2005)
68.052 سال (2006)
68.487 سال (2007)
68.902 سال (2008)
69.29 سال (2009)
69.644 سال (2010)
69.958 سال (2011)
70.234 سال (2012)
70.477 سال (2013)
70.69 سال (2014)
70.879 سال (2015)
71.051 سال (2016) 
حکمران
صدر تاجکستان   ایمانعلی رحمان  
وزیر اعظم تاجکستان   قاہر رسول زادہ (23 نومبر 2013–) 
قیام اور اقتدار
تاریخ
یوم تاسیس 1991 
عمر کی حدبندیاں
شادی کی کم از کم عمر 18 سال  
الحاق اور رکنیت
مشترکہ سرحدیں
ازبکستان (Tajikistan–Uzbekistan border )
کرغیزستان (Kyrgyzstan–Tajikistan border )
عوامی جمہوریہ چین (China–Tajikistan border )
افغانستان (Afghanistan–Tajikistan border ) 
خام ملکی پیداوار
  کل
7145701018.7492 امریکی ڈالر (2017) 
  فی کس 2365.921 بین الاقوامی ڈالر (1990) 
جی ڈی پی تخمینہ
  فی کس 497 امریکی ڈالر (1990)
469 امریکی ڈالر (1991)
346 امریکی ڈالر (1992)
291 امریکی ڈالر (1993)
267 امریکی ڈالر (1994)
213 امریکی ڈالر (1995)
178 امریکی ڈالر (1996)
155 امریکی ڈالر (1997)
219 امریکی ڈالر (1998)
177 امریکی ڈالر (1999)
138 امریکی ڈالر (2000)
170 امریکی ڈالر (2001)
189 امریکی ڈالر (2002)
236 امریکی ڈالر (2003)
309 امریکی ڈالر (2004)
337 امریکی ڈالر (2005)
404 امریکی ڈالر (2006)
520 امریکی ڈالر (2007)
706 امریکی ڈالر (2008)
666 امریکی ڈالر (2009)
738 امریکی ڈالر (2010)
834 امریکی ڈالر (2011)
954 امریکی ڈالر (2012)
1040 امریکی ڈالر (2013)
1104 امریکی ڈالر (2014)
918 امریکی ڈالر (2015)
795 امریکی ڈالر (2016)
801 امریکی ڈالر (2017) 
کل ذخائر 38865840 امریکی ڈالر (1997)
55881641 امریکی ڈالر (1998)
57433087 امریکی ڈالر (1999)
94280872 امریکی ڈالر (2000)
94282881 امریکی ڈالر (2001)
89508814 امریکی ڈالر (2002)
117567951 امریکی ڈالر (2003)
172081998 امریکی ڈالر (2004)
188914218 امریکی ڈالر (2005)
203823175 امریکی ڈالر (2006)
85217547 امریکی ڈالر (2007)
163514282 امریکی ڈالر (2008)
254940274 امریکی ڈالر (2009)
403106502 امریکی ڈالر (2010)
518942426 امریکی ڈالر (2011)
630690458 امریکی ڈالر (2012)
661311930 امریکی ڈالر (2013)
512645378 امریکی ڈالر (2014)
493391420 امریکی ڈالر (2015)
644763395 امریکی ڈالر (2016)
1291955730 امریکی ڈالر (2017) 
اشاریہ انسانی ترقی
اشاریے
0.650 (2017) 
شرح بے روزگاری 11 فیصد (2014) 
دیگر اعداد و شمار
منطقۂ وقت متناسق عالمی وقت+05:00  
ٹریفک سمت دائیں  
ڈومین نیم tj.  
آیزو 3166-1 الفا-2 TJ 
بین الاقوامی فون کوڈ +992 

سوویت اتحاد سے آزادی ملنے کے بعد تاجکستان 1992ء سے 1997ء تک زبردست خانہ جنگی کا شکار رہا۔ خانہ جنگی کے خاتمے کے بعد سیاسی استحکام، غیر ملکی امداد اور ملک کے دو بڑے قدرتی ذرائع کپاس اور المونیم نے ملکی معیشت کی بہتری میں اہم کردار ادا کیا۔

This article is issued from Wikipedia. The text is licensed under Creative Commons - Attribution - Sharealike. Additional terms may apply for the media files.