ولادیمیر پیوٹن

ولادیمیر پیوتن (پیدائش: 7 اکتوبر 1952ء) روسی سیاست دان اور 7 مئی 2012ء سے تاحال روس کے صدر ہیں۔ پیوتن اس سے پہلے بھی 2000ء سے 2008ء تک صدر کے طور پر خدمات انجام دے چکے ہیں۔ وہ 1999ء سے 2000ء تک اور پھر 2008ء سے 2012ء تک روس کے وزیر اعظم رہے۔ پوٹن متحدہ روس نامی روسی سیاسی جماعت کے پہلے چیئرمین تھے۔

ولادیمیر پیوٹن
(روسی میں: Владимир Владимирович Путин) 
 

مناصب
صدر نشین  
دفتر میں
1995  – 1997 
در اوور ہوم - رشیا  
ناظم وفاقی حفاظتی خدمات  
دفتر میں
25 جولا‎ئی 1998  – 29 مارچ 1999 
وزیراعظم روس (34  )  
دفتر میں
16 اگست 1999  – 7 مئی 2000 
قائم مقام صدر روس  
دفتر میں
31 دسمبر 1999  – 7 مئی 2000 
صدر روس (2  )  
دفتر میں
7 مئی 2000  – 7 مئی 2008 
بورس یلسن  
دمتری میدوی ایدف  
وزیراعظم روس (38  )  
دفتر میں
8 مئی 2008  – 7 مئی 2012 
 
دمتری میدوی ایدف  
صدر روس (4  )  
آغاز منصب
7 مئی 2012 
دمتری میدوی ایدف  
 
صدر نشین  
آغاز منصب
16 جولا‎ئی 2012 
معلومات شخصیت
پیدائش 7 اکتوبر 1952 (67 سال)[1][2] 
رہائش ڈریسڈن (1985–1990)[3][4]
سینٹ پیٹرز برگ (1987–1992)[5]
سینٹ پیٹرز برگ (1992–)[6]
ماسکو (1996–) 
شہریت سوویت اتحاد (–1991)
روس (1991–)[7][8][9] 
نسل روسی [10] 
بالوں کا رنگ سرخ  
قد 170 سنٹی میٹر [11] 
وزن 77 کلو گرام  
استعمال ہاتھ دایاں (رائٹ ہینڈڈ)  
مذہب روسی آرتھوڈاکس چرچ [12] 
جماعت اشتمالی جماعت سوویت اتحاد (1975–1991)
اوور ہوم - رشیا (مئی 1995–1999)
آزاد (1991–1995)
آزاد (1999–) 
زوجہ لودمیلا پیوتن (28 جولا‎ئی 1983–2 اپریل 2014) 
اولاد ماریا پیوتن  
والد ولادیمیر پیوتن  
والدہ ماریا پیوتن  
عملی زندگی
مادر علمی ریاستی جامعہ سینٹ پٹیرزبرک  
پیشہ سیاست دان ،  مفسرِ قانون ،  جوڈوکا ،  آپ بیتی نگار ،  ماہر معاشیات ،  اسٹنٹ پرفارمر [13]،  کوچ ،  فوجی افسر ،  وکیل  
مادری زبان روسی  
پیشہ ورانہ زبان روسی [14]،  جرمن [15]،  انگریزی [15]،  سونسکا [16] 
شعبۂ عمل سیاست ،  کھیل کود ،  صدر روس  
ملازمت روس کی صدرارتی انتظامیہ ،  کے جی بی  
کل دولت 8891777 روسی روبل (2015)[17] 
کھیل جوڈو  
عسکری خدمات
شاخ کے جی بی  
عہدہ کرنل  
اعزازات
 آرڈر آف جوز مارٹی (2014)
 آرڈر آف دی ریپبلک آف سربیا (2013)
کنفیوشس امن انعام (2011)
 آرڈر آف دی لبرٹور (2010)
ٹائم سال کی شخصیت (2007)
 آرڈر آف عبد العزیز السعود   (2007)[18]
آرڈر آف زاید (2007)
 گرینڈ کراس آف دی لیگون آف ہانر (2006)
 آرڈر آف آگسٹنہو نیٹو
اعزازی رکن
اولمپک آرڈر  
دستخط
 
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ (روسی )،  باضابطہ ویب سائٹ (انگریزی ) 
IMDB پر صفحہ 

حوالہ جات

  1. Vladimir Putin — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اپریل 2014 — اجازت نامہ: CC0
  2. ایس این اے سی آرک آئی ڈی: http://snaccooperative.org/ark:/99166/w6m40cxf — بنام: Vladimir Putin — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  3. Здесь жил и работал подполковник Путин: экскурсия по Дрездену — اخذ شدہ بتاریخ: 6 جنوری 2017 — سے آرکائیو اصل فی 6 جنوری 2017 — ناشر: ڈوئچے ویلے — شائع شدہ از: 24 جون 2010
  4. «Завхоз» из Дрездена: как Владимир Путин сошелся с Сергеем Чемезовым — اخذ شدہ بتاریخ: 6 جنوری 2017 — سے آرکائیو اصل فی 27 اپریل 2016 — ناشر: فوربس میگزین — شائع شدہ از: 20 مئی 2013
  5. ناشر: Kommersant — شائع شدہ از: 1 اکتوبر 2012
  6. ناشر: Lenta.ru — شائع شدہ از: 1 اگست 2016
  7. http://www.nytimes.com/2009/05/16/world/europe/16gazprom.html?pagewanted=all
  8. http://espn.go.com/tennis/story/_/id/11738938/tennis-maria-sharapova-no-1-chances-take-hit-loss-caroline-wozniacki
  9. http://espn.go.com/olympics/winter/2014/story/_/id/10323103/importance-sochi-olympics-vladimir-putin-espn-magazine
  10. https://www.youtube.com/watch?v=O6FTew7CjUI
  11. Statesmen and stature: how tall are our world leaders? — اخذ شدہ بتاریخ: 17 جون 2018 — ناشر: دی گارجین — شائع شدہ از: 18 اکتوبر 2011
  12. http://www.aif.ru/dossier/1369
  13. https://www.rbc.ru/politics/14/12/2017/5a32117e9a79470f8291fcd4?from=main
  14. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb136071802 — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  15. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb136071802
  16. http://www.themoscowtimes.com/news/article/kremlin-chief-of-staff-surprised-but-not-alarmed-by-navalny/486872.html
  17. https://rg.ru/2016/04/15/obnarodovana-deklaracii-o-dohodah-vladimira-putina-za-2015-god.html
  18. https://www.novayagazeta.ru/news/2007/02/12/8571-korol-saudovskoy-aravii-abdalla-vruchil-vladimiru-putinu-vysshuyu-gosudarstvennuyu-nagradu-korolevstva-orden-imeni-korolya-abdel-aziza
This article is issued from Wikipedia. The text is licensed under Creative Commons - Attribution - Sharealike. Additional terms may apply for the media files.