قبرص

قبرص (انگریزی: Cyprus; تلفظ: i/ˈsprəs/; یونانی: Κύπρος، نقل حرفی: Kýpros یونانی تلفظ : [ˈcipros]; ترکی: Kıbrıs ترکی تلفظ: [ˈkɯbɾɯs])، رسمی اور پر Republic of Cyprus (یونانی: Κυπριακή Δημοκρατία، نقل حرفی: Kypriakí Demokratía; ترکی: Kıbrıs Cumhuriyeti) مشرقی بحیرہ روم کا ایک جزیرہ اور ملک ہے جو اناطولیہ (ایشیائے کوچک) کے جنوب میں واقع ہے۔ جمہوریہ قبرص 6 اضلاع میں تقسیم ہے جبکہ ملک کا دارالحکومت نکوسیا ہے۔ 1913ء میں برطانوی نو آبادیاتی بننے والا قبرص 1960ء میں برطانیہ سے آزادی حاصل کرنے میں کامیاب ہوا۔ 11 سال تک فسادات کے بعد 1964ء میں اقوام متحدہ کی امن فوج تعینات کی گئی جس کے بعد جزیرے کے یونان کے ساتھ الحاق کیا گیا جس پر ترکی نے 1974ء میں جزیرے پر حملہ کر دیا۔ اس کے نتیجے میں شمالی قبرص میں ترکوں کی حکومت قائم ہوگئی جسے ترک جمہوریۂ شمالی قبرص کہلاتی ہے تاہم اسے اقوام متحدہ تسلیم نہیں کرتی۔ شمالی قبرص اور قبرص ایک خط کے ذریعے منقسم ہیں جسے "خط سبز" کہا جاتا ہے۔ شمالی قبرص کو صرف ترکی کی حکومت تسلیم کرتی ہے۔ جمہوریہ قبرص یکم مئی 2004ء کو یورپی یونین کا رکن بنا۔

جمہوریہ قبرص
Republic of Cyprus

Κυπριακή Δημοκρατία  (یونانی)
Kıbrıs Cumhuriyeti  (ترکی)
پرچم
ترانہ: مناجات آزادی[lower-alpha 1] (یونانی قبرصی)
"Hymn to Liberty"
قبرص کامحل وقوع (تصویر میں نچلے دائیں)، جمہوریہ قبرص سبز رنگ میں اور ترک جمہوریہ شمالی قبرص روشن سبز رنگ میں، اور باقی یورپی اتحاد ہلکے سبز رنگ میں
دار الحکومت
اور سب سے بڑا شہر
نیکوسیا  
35°10′N 33°22′E
دفتری زبانیں
اقلیتی زبانیں
دیسی زبانیں
نسلی گروہ
نام آبادی قبرصی
حکومت وحدانی صدارتی جمہوریہ
 صدر
نیکوس آناستاسیادیس
 پارلیمانی صدر
Demetris Syllouris
مقننہ ایوان نمائندگان
آزادیمملکت متحدہ سے
 زیوریخ اور لندن معاہدے
19 فروری 1959
 آزادی کا اعلان
16 اگست 1960
 یوم آزادی
1 اکتوبر 1960
 شمولیت یورپی اتحاد
1 مئی 2004
رقبہ
9,251 کلومیٹر2 (3,572 مربع میل) (168 واں)
 آبی (%)
9
آبادی
 2013 تخمینہ
1,141,166[lower-alpha 3][3] (158 واں)
 2011 [lower-alpha 3][4] مردم شماری
838,897[lower-alpha 4][5]
 کثافت
123.4/کلو میٹر2 (319.6/مربع میل) (82 واں)
خام ملکی پیداوار (مساوی قوت خرید) 2016 تخمینہ
 کل
$29.666 بلین[6] (126 واں)
 فی کس
$34,970[6] (35 واں)
خام ملکی پیداوار (برائے نام) 2016 تخمینہ
 کل
$19.810 بلین[6] (114 واں)
 فی کس
$23,352[6] (33 واں)
جینی (2015)  33.6[7]
متوسط
انسانی ترقیاتی اشاریہ (2015)  0.856[8]
انتہائی اعلی · 33 واں
کرنسی یورو (EUR)
منطقۂ وقت مشرقی یورپی وقت (متناسق عالمی وقت+2)
مشرقی یورپی گرما وقت (متناسق عالمی وقت+3)
ڈرائیونگ سمت بائیں ہاتھ
کالنگ کوڈ +357
انٹرنیٹ ڈومین Cy.[lower-alpha 5]

تاریخ

قبرص 395ء میں رومی سلطنت کی تقسیم کے بعد بازنطینی سلطنت کا حصہ بنا اور امیر معاویہ کے دور میں اسے مسلمانوں نے فتح کر لیا۔

تیسری صلیبی جنگ کے دوران 1191ء میں انگلستان کے شاہ رچرڈ اول (رچرڈ شیر دل) نے اسے فتح کر لیا اور مملکت قبرص کی بنیاد رکھی۔

1489ء میں جمہوریہ وینس نے جزیرے کا کنٹرول سنبھال لیا جبکہ 1571ء میں لالہ مصطفی کی زیر قیادت عثمانی فوج نے جزيرہ فتح کر لیا۔

قبرص کے بڑے شہر

درجہشہر کا نامضلعآبادی
1نیکوسیانیکوسیا398,293
2لیماسوللیماسول235,056
3لارناکالارناکا72,000
4فاماگوستافاماگوستا42,526
5پافوسپافوس32,754
6کیرینیہکیرینیہ26,701
7پروٹاراسفاماگوستا20,230
8مورفونیکوسیا14,833
9ارادھیپولارناکا13,349
10پارالیمینیفاماگوستا

جغرافیہ

جغرافیہ قبرص

قبرص بحیرہ روم کا ساردینیا اور صقلیہ کے بعد تیسرا سب سے بڑا (بلحاظ علاقہ اور آبادی) جزیرہ ہے۔

یہ 240 کلومیٹر (149 میل) طویل اور وسیع ترین مقام پر 100 کلومیٹر (62 میل) چوڑا ہے۔ ترکی اس کے شمال میں 75 کلومیٹر (47 میل) کے فاصلے پر ہے۔ دیگر ہمسایہ ممالک مشرق میں شام اور لبنان ہیں (بالترتیب 105 کلومیٹر (65 میل) اور 108 کلومیٹر (67 میل))، اسرائیل جنوب مشرقی میں 200 کلومیٹر (124 میل)، مصر جنوب میں 380 کلومیٹر (236 میل)، جزیرہ روڈز 400 کلومیٹر (249 میل)، اور یونان سے 800 کلومیٹر (497 میل) کے فاصلے پر واقع ہیں۔

جغرافیائی سیاسی طور پر جزیرے کو چار اہم حصوں میں تقسیم کیا جاتا ہے، جمہوریہ قبرص جزیرے کے دو تہائی جنوبی حصہ (59.74٪) پر واقع ہے۔ ترک جمہوریہ شمالی قبرص شمالی تہائی حصہ (34.85٪) پر واقع ہے۔ اور اقوام متحدہ کے زیر گرین لائن جزیرے کو دو الگ حصوں میں تقسیم کرتا ہے اور ایک بفر زون بناتا ہے جو جزیرے کے کل رقبہ کا 2،67٪ کا احاطہ کرتا ہے۔ آخر میں برطانوی حاکمیت کے تحت دو فوجی اڈے جزیرے پر واقع ہیں: ایکروتیری و دیکیلیا باقی 2،74٪ پر واقع ہیں۔

جامعات - جمہوریہ قبرص

جامعہ قبرص (University of Cyprus)

جامعہ طرزیات قبرص (Cyprus University of Technology)

مفتوح جامعہ قبرص (Open University of Cyprus)

جامعہ فریڈرک (Frederick University)

جامعہ نیکوسیا (University of Nicosia)

یورپی جامعہ قبرص (European University of Cyprus)

جامعہ نیاپولس (Neapolis University)

بین الاقوامی جامعہ قبرص (Cyprus International University)

انتظامی تقسیم

جمہوریہ قبرص کے چھ اضلاع ہیں- جن کے دارالحکومتوں کے نام مشترک ہیں-

قبرص کا نقشہاضلاعیونانی نامترکی نام
NicosiaLarnacaلیماسولPaphosایکروتیری و دیکیلیاKyreniaFamagustaایکروتیری و دیکیلیا
فاماگوستا   Αμμόχωστος - Ammochostos    Gazimağusa   
کیرینیہΚερύvεια - KeryneiaGirne
لارناکاΛάρνακα - LarnakaLarnaka/İskele
لیماسولΛεμεσός - LemesosLimasol/Leymosun
نیکوسیاΛευκωσία - LefkosiaLefkoşa
پافوسΠάφος - Pafos/BafosBaf/Gazibaf

سیاحی مقامات

نیکوسیا

لیماسول

لارناکا

پافوس

آئیا ناپا

پولس

سلامیس

ٹروڈوس سلسلہ کوہ

مزید دیکھیے

قبرص کے بڑے شہر - تصاریر

فہرست متعلقہ مضامین قبرص

  • فہرست متعلقہ مضامین قبرص

حوالہ جات

  1. "National Anthem"۔ www.presidency.gov.cy۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 3 جون 2015۔
  2. "Cyprus"۔ The World Factbook۔ CIA۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 15 جنوری 2016۔
  3. United Nations, Department of Economic and Social Affairs, Population Division (2013). World Population Prospects: The 2012 Revision, Highlights and Advance Tables (ESA/P/WP.220). New York. p. 52. http://esa.un.org/wpp/Documentation/pdf/WPP2012_HIGHLIGHTS.pdf.
  4. United Nations, Department of Economic and Social Affairs, Population Division (2013). World Population Prospects: The 2012 Revision, DB02: Stock Indicators. New York. http://esa.un.org/unpd/wpp/ASCII-Data/DISK_NAVIGATION_ASCII.htm.
  5. "Statistical Service – Population and Social Conditions – Population Census – Announcements – Preliminary Results of the Census of Population, 2011" (Greek زبان میں)۔ Statistical Service of the Ministry of Finance of the Republic of Cyprus۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 جنوری 2012۔
  6. "Report for Selected Countries and Subjects"۔ World Economic Outlook Database, April 2017۔ Washington, D.C.: بین الاقوامی مالیاتی فنڈ۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 اپریل 2017۔
  7. "Gini coefficient of equivalised disposable income – EU-SILC survey"۔ Luxembourg: Eurostat۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 اپریل 2017۔
  8. "Table 1: Human Development Index and its components"۔ Human Development Reports۔ Stockholm: United Nations Development Programme۔ مورخہ 26 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 27 اپریل 2017۔
  1. The Greek national anthem was adopted in 1966 by a decision of the Council of Ministers.[1]
  2. بشمول ترک جمہوریہ شمالی قبرص, the قبرص میں اقوام متحدہ بفر زون and ایکروتیری و دیکیلیا.
  3. Excluding Northern Cyprus.
  4. The .eu domain is also used, shared with other یورپی اتحاد member states.
This article is issued from Wikipedia. The text is licensed under Creative Commons - Attribution - Sharealike. Additional terms may apply for the media files.