قازقستان

قازقستان (Қазақстан) وسطی ایشیا کا ایک ملک ہے۔ ملک کا سرکاری نام جمہوریہ قازقستان ہے اور یہ بلحاظ رقبہ دنیا کا نواں سب سے بڑا ملک ہے۔ اس کا رقبہ 2,727,300 مربع کلومیٹر ہے جو مغربی یورپ کے کل رقبے سے بھی زیادہ ہے یہ دنیا کا سب سے بڑا خشکی میں محصور ملک بھی ہے۔[23][24] اس کے شمال میں روس، مشرق میں چین، جنوب مشرق میں کرغیزستان، جنوب میں ازبکستان اور ترکمانستان اور جنوب مغرب میں بحیرہ قزوین واقع ہیں۔ 1997ء تک دار الحکومت الماتے تھا جسے بعد میں استانہ منتقل کر دیا گیا۔ الماتے ملک کا سب سے بڑا شہر ہے۔

  

قازقستان
(قازق میں: Қазақстан Республикасы) 
قازقستان
قازقستان کا پرچم  
قازقستان
نشان

 

ترانہ:مہنیک قازقستانیم  
زمین و آبادی
متناسقات 48°N 68°E / 48; 68   [1]
بلند مقام خان تنگری  
رقبہ 2724900.0 مربع کلومیٹر  
دارالحکومت نورسلطان  
سرکاری زبان قازق زبان [2][3]،  روسی [4] 
آبادی 18037646 (2017)[5] 
اوسط عمر
65.51951 سال (1999)[6]
65.51707 سال (2000)[6]
65.76829 سال (2001)[6]
65.96829 سال (2002)[6]
65.86585 سال (2003)[6]
65.8878 سال (2004)[6]
65.90976 سال (2005)[6]
66.16098 سال (2006)[6]
66.50488 سال (2007)[6]
67.02195 سال (2008)[6]
68.42927 سال (2009)[6]
68.29537 سال (2010)[6]
68.98 سال (2011)[6]
69.61 سال (2012)[6]
70.45 سال (2013)[6]
71.62 سال (2014)[6]
72 سال (2015)[6]
72.3 سال (2016)[6] 
حکمران
طرز حکمرانی صدارتی نظام [7][8] 
صدر قازقستان   قاسم جومارت توکائیف (2019–) 
قیام اور اقتدار
تاریخ
یوم تاسیس 1991 
عمر کی حدبندیاں
شادی کی کم از کم عمر 18 سال ،  17 سال  
الحاق اور رکنیت
اقوام متحدہ (2 مارچ 1992–)
آزاد ریاستوں کی دولت مشترکہ
شنگھائی تعاون تنظیم (26 اپریل 1996–)[9]
تنظیم تعاون اسلامی
بین الاقوامی بنک برائے تعمیر و ترقی (23 جولا‎ئی 1992–)
بین الاقوامی انجمن برائے ترقی (23 جولا‎ئی 1992–)
بین الاقوامی مالیاتی شرکت (30 ستمبر 1993–)
کثیرالفریق گماشتگی برائے ضمانت سرمایہ کاری (12 اگست 1993–)
بین الاقوامی مرکز برائےتصفیہ تنازعات سرمایہ کاری (21 اکتوبر 2000–)
ایشیائی ترقیاتی بینک (1994–)
انٹرپول [10]
تنظیم برائے ممانعت کیمیائی ہتھیار [11]
یونیسکو (22 مئی 1992–)[12]
عالمی ڈاک اتحاد [13]
عالمی ٹیلی مواصلاتی اتحاد (23 فروری 1993–)[14] 
مشترکہ سرحدیں
ترکمانستان (Kazakhstan–Turkmenistan border )
عوامی جمہوریہ چین (China–Kazakhstan border )
کرغیزستان (Kazakhstan–Kyrgyzstan border )
ازبکستان (Kazakhstan–Uzbekistan border )
روس (Kazakhstan–Russia border ) 
خام ملکی پیداوار
  کل
159406926359.122 امریکی ڈالر (2017)[15] 
  فی کس 8432.954 بین الاقوامی ڈالر (1990)[16] 
جی ڈی پی تخمینہ
  فی کس 1647 امریکی ڈالر (1990)[17]
1512 امریکی ڈالر (1991)[17]
1515 امریکی ڈالر (1992)[17]
1433 امریکی ڈالر (1993)[17]
1320 امریکی ڈالر (1994)[17]
1288 امریکی ڈالر (1995)[17]
1350 امریکی ڈالر (1996)[17]
1445 امریکی ڈالر (1997)[17]
1468 امریکی ڈالر (1998)[17]
1130 امریکی ڈالر (1999)[17]
1229 امریکی ڈالر (2000)[17]
1490 امریکی ڈالر (2001)[17]
1658 امریکی ڈالر (2002)[17]
2068 امریکی ڈالر (2003)[17]
2874 امریکی ڈالر (2004)[17]
3771 امریکی ڈالر (2005)[17]
5291 امریکی ڈالر (2006)[17]
6771 امریکی ڈالر (2007)[17]
8513 امریکی ڈالر (2008)[17]
7165 امریکی ڈالر (2009)[17]
9070 امریکی ڈالر (2010)[17]
11634 امریکی ڈالر (2011)[17]
12386 امریکی ڈالر (2012)[17]
13890 امریکی ڈالر (2013)[17]
12807 امریکی ڈالر (2014)[17]
10510 امریکی ڈالر (2015)[17]
7714 امریکی ڈالر (2016)[17]
9030 امریکی ڈالر (2017)[17] 
کل ذخائر 711198429 امریکی ڈالر (1993)[18]
1216175915 امریکی ڈالر (1994)[18]
1659893118 امریکی ڈالر (1995)[18]
1960072969 امریکی ڈالر (1996)[18]
2222793385 امریکی ڈالر (1997)[18]
1965445702 امریکی ڈالر (1998)[18]
2000928951 امریکی ڈالر (1999)[18]
2098969798 امریکی ڈالر (2000)[18]
2505883853 امریکی ڈالر (2001)[18]
3140845038 امریکی ڈالر (2002)[18]
4962118091 امریکی ڈالر (2003)[18]
9276665301 امریکی ڈالر (2004)[18]
7069707373 امریکی ڈالر (2005)[18]
19127059963 امریکی ڈالر (2006)[18]
17641023633 امریکی ڈالر (2007)[18]
19883105664 امریکی ڈالر (2008)[18]
23183086319 امریکی ڈالر (2009)[18]
28264707688 امریکی ڈالر (2010)[18]
29215276999 امریکی ڈالر (2011)[18]
28299368259 امریکی ڈالر (2012)[18]
24691645607 امریکی ڈالر (2013)[18]
29250312400 امریکی ڈالر (2014)[18]
27854795608 امریکی ڈالر (2015)[18]
29603055823 امریکی ڈالر (2016)[18]
30746770568 امریکی ڈالر (2017)[18] 
اشاریہ انسانی ترقی
اشاریے
0.800 (2017)[19] 
شرح بے روزگاری 4 فیصد (2014)[20] 
دیگر اعداد و شمار
منطقۂ وقت متناسق عالمی وقت+05:00
متناسق عالمی وقت+06:00  
ٹریفک سمت دائیں [21] 
ڈومین نیم kz.  
سرکاری ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ 
آیزو 3166-1 الفا-2 KZ 
بین الاقوامی فون کوڈ +7[22] 

قازقستان کی وسیع و عریض سرزمین بڑی متنوع ہے، اس میں گھاس کے میدان، قطبی جنگلات، برف پوش پہاڑ، دریائی میدان اور صحرا سب کچھ شامل ہیں۔ 1,64,00,000 آبادی کے ساتھ قازقستان بلحاظ آبادی دنیا میں 62 ویں نمبر پر آتا ہے اور اس کی کثافتِ آبادی صرف 6 افراد فی مربع کلومیٹر ہے۔

تاریخی طور پر یہ خانہ بدوشوں کا ملک رہا ہے۔ سولہویں صدی تک یہاں کے لوگ تین واضح قبیلوں کی صورت میں منظم ہو چکے تھے۔ ان قبیلوں کو مقامی زبان میں "جُز" کہتے ہیں۔ اٹھارویں صدی میں روسیوں نے قازقستان پر حملوں کا سلسلہ شروع کیا جس کے نتیجے میں انیسویں صدی کے وسط تک پورا قازقستان سلطنت روس کا حصہ بن چکا تھا۔

قازقستان نے 16 دسمبر 1991ء کو سوویت اتحاد سے اپنی آزادی کا اعلان کیا۔ یہ سوویت اتحاد سے الگ ہونے والی اس کی آخری ریاست تھی۔ سوویت دور کے رہنما نورسلطان نذربایف ملک کے نئے صدر بنے۔ آزادی کے بعد سے قازقستان ایک متوازن خارجہ پالیسی پر گامزن ہے اور اپنی معیشت، خصوصاً معدنی تیل اور اس سے متعلقہ صنعتوں، کی ترقی پر توجہ دے رہا ہے۔

فہرست متعلقہ مضامین قازقستان

  • فہرست متعلقہ مضامین قازقستان

حوالہ جات

  1.   "صفحہ قازقستان في خريطة الشارع المفتوحة"۔ OpenStreetMap۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 اگست 2019۔
  2. http://online.zakon.kz/Document/?doc_id=1008034
  3. http://online.zakon.kz/Document/?doc_id=1008034 — باب: 7.1
  4. http://online.zakon.kz/Document/?doc_id=1008034 — باب: 7.2
  5. https://data.worldbank.org/indicator/SP.POP.TOTL — اخذ شدہ بتاریخ: 8 اپریل 2019 — ناشر: عالمی بنک
  6. http://data.uis.unesco.org/Index.aspx?DataSetCode=DEMO_DS
  7. اقتباس: 1. Республика Казахстан является унитарным государством с президентской формой правления.
  8. http://www.constcouncil.kz/rus/norpb/constrk/
  9. http://eng.sectsco.org/about_sco/ — اخذ شدہ بتاریخ: 8 دسمبر 2017 — ناشر: شنگھائی تعاون تنظیم
  10. https://www.interpol.int/Member-countries/World — اخذ شدہ بتاریخ: 7 دسمبر 2017 — ناشر: انٹرپول
  11. https://www.opcw.org/about-opcw/member-states/ — اخذ شدہ بتاریخ: 7 دسمبر 2017 — ناشر: تنظیم برائے ممانعت کیمیائی ہتھیار
  12. http://www.unesco.org/eri/cp/ListeMS_Indicators.asp
  13. http://www.upu.int/en/the-upu/member-countries.html — اخذ شدہ بتاریخ: 4 مئی 2019
  14. https://www.itu.int/online/mm/scripts/gensel8 — اخذ شدہ بتاریخ: 4 مئی 2019
  15. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.MKTP.CD?locations=KZ — اخذ شدہ بتاریخ: 19 اکتوبر 2018 — ناشر: عالمی بنک
  16. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.PCAP.PP.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 11 جون 2019 — ناشر: عالمی بنک
  17. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.PCAP.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 27 مئی 2019 — ناشر: عالمی بنک
  18. https://data.worldbank.org/indicator/FI.RES.TOTL.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 1 مئی 2019 — ناشر: عالمی بنک
  19. http://hdr.undp.org/en/data — ناشر: United Nations Development Programme
  20. http://data.worldbank.org/indicator/SL.UEM.TOTL.ZS
  21. http://chartsbin.com/view/edr
  22. http://countrycode.org/kazakhstan — اخذ شدہ بتاریخ: 24 فروری 2015
  23. Agency of Statistics of the Republic of Kazakhstan (ASRK). 2005. Main Demographic Indicators. Available at http://www.stat.kz
  24. United States Central Intelligence Agency (CIA). 2007. “Kazakhstan” in The World Factbook. Book on-line. Available at https://www.cia.gov/library/publications/the-world-factbook/geos/kz.html

This article is issued from Wikipedia. The text is licensed under Creative Commons - Attribution - Sharealike. Additional terms may apply for the media files.