سوڈان

سودان يا السودان (عربى ميں معنی "کالے لوگ" ہے) براعظم افریقا کا ایک اسلامی ملک ہے۔

دیگر استعمالات کے لیے، دیکھیے سوڈان (ضد ابہام)۔

  

سوڈان
(عربی میں: جمهورية السودان) 
سوڈان
پرچم
سوڈان
نشان

 

شعار
(عربی میں: النصر لنا) 
ترانہ:
زمین و آبادی
متناسقات 15°N 32°E / 15; 32   [1]
پست مقام بحیرہ احمر (0 میٹر ) 
رقبہ 1886068 مربع کلومیٹر  
دارالحکومت خرطوم  
سرکاری زبان عربی [2]،  انگریزی [2] 
آبادی 30894000 (2008) 
اوسط عمر
58.07 سال (1999)[3]
58.43 سال (2000)[3]
58.801 سال (2001)[3]
59.184 سال (2002)[3]
59.582 سال (2003)[3]
59.993 سال (2004)[3]
60.416 سال (2005)[3]
60.854 سال (2006)[3]
61.3 سال (2007)[3]
61.749 سال (2008)[3]
62.193 سال (2009)[3]
62.62 سال (2010)[3]
63.019 سال (2011)[3]
63.384 سال (2012)[3]
63.712 سال (2013)[3]
64.002 سال (2014)[3]
64.257 سال (2015)[3]
64.486 سال (2016)[3] 
حکمران
طرز حکمرانی وفاقی جمہوریہ  
صدر سوڈان ،  چیئرمین انتقالی فوجی کونسل   عبد الفتاح عبد الرحمن برہان (12 اپریل 2019–) 
قیام اور اقتدار
تاریخ
یوم تاسیس 1 جنوری 1956 
عمر کی حدبندیاں
الحاق اور رکنیت
اقوام متحدہ (12 نومبر 1956–)
افریقی اتحاد
عرب لیگ (19 جنوری 1956–)
تنظیم تعاون اسلامی
بین الاقوامی بنک برائے تعمیر و ترقی (5 ستمبر 1957–)
بین الاقوامی انجمن برائے ترقی (24 ستمبر 1960–)
بین الاقوامی مالیاتی شرکت (21 اکتوبر 1960–)
کثیرالفریق گماشتگی برائے ضمانت سرمایہ کاری (7 نومبر 1991–)
بین الاقوامی مرکز برائےتصفیہ تنازعات سرمایہ کاری (9 مئی 1973–)
افریقی ترقیاتی بینک
انٹرپول [4]
تنظیم برائے ممانعت کیمیائی ہتھیار [5]
یونیسکو (26 نومبر 1956–)[6]
عالمی ڈاک اتحاد [7]
عالمی ٹیلی مواصلاتی اتحاد (23 اکتوبر 1957–)[8] 
مشترکہ سرحدیں
جنوبی سوڈان (South Sudan–Sudan border )
چاڈ (Chad–Sudan border )
وسطی افریقی جمہوریہ (Central African Republic–Sudan border )
ایتھوپیا (Ethiopia–Sudan border )
اریتریا (Eritrea–Sudan border )
مصر (Egypt–Sudan border )
لیبیا (Libya–Sudan border )
کینیا (Kenya–Sudan border )
یوگنڈا (Sudan–Uganda border )
جمہوری جمہوریہ کانگو (Democratic Republic of the Congo–Sudan border ) 
خام ملکی پیداوار
  کل
117487857142.857 امریکی ڈالر (2017)[9] 
  فی کس 1126.579 بین الاقوامی ڈالر (1990)[10] 
جی ڈی پی تخمینہ
  فی کس 124 امریکی ڈالر (1960)[11]
131 امریکی ڈالر (1961)[11]
139 امریکی ڈالر (1962)[11]
137 امریکی ڈالر (1963)[11]
137 امریکی ڈالر (1964)[11]
139 امریکی ڈالر (1965)[11]
139 امریکی ڈالر (1966)[11]
146 امریکی ڈالر (1967)[11]
148 امریکی ڈالر (1968)[11]
158 امریکی ڈالر (1969)[11]
175 امریکی ڈالر (1970)[11]
185 امریکی ڈالر (1971)[11]
194 امریکی ڈالر (1972)[11]
234 امریکی ڈالر (1973)[11]
291 امریکی ڈالر (1974)[11]
344 امریکی ڈالر (1975)[11]
415 امریکی ڈالر (1976)[11]
501 امریکی ڈالر (1977)[11]
427 امریکی ڈالر (1978)[11]
486 امریکی ڈالر (1979)[11]
388 امریکی ڈالر (1980)[11]
503 امریکی ڈالر (1981)[11]
449 امریکی ڈالر (1982)[11]
386 امریکی ڈالر (1983)[11]
441 امریکی ڈالر (1984)[11]
547 امریکی ڈالر (1985)[11]
676 امریکی ڈالر (1986)[11]
840 امریکی ڈالر (1987)[11]
625 امریکی ڈالر (1988)[11]
605 امریکی ڈالر (1989)[11]
478 امریکی ڈالر (1990)[11]
427 امریکی ڈالر (1991)[11]
257 امریکی ڈالر (1992)[11]
316 امریکی ڈالر (1993)[11]
444 امریکی ڈالر (1994)[11]
467 امریکی ڈالر (1995)[11]
296 امریکی ڈالر (1996)[11]
374 امریکی ڈالر (1997)[11]
350 امریکی ڈالر (1998)[11]
323 امریکی ڈالر (1999)[11]
361 امریکی ڈالر (2000)[11]
377 امریکی ڈالر (2001)[11]
412 امریکی ڈالر (2002)[11]
477 امریکی ڈالر (2003)[11]
565 امریکی ڈالر (2004)[11]
679 امریکی ڈالر (2005)[11]
893 امریکی ڈالر (2006)[11]
1115 امریکی ڈالر (2007)[11]
1291 امریکی ڈالر (2008)[11]
1226 امریکی ڈالر (2009)[11]
1476 امریکی ڈالر (2010)[11]
1666 امریکی ڈالر (2011)[11]
1892 امریکی ڈالر (2012)[11]
1955 امریکی ڈالر (2013)[11]
2176 امریکی ڈالر (2014)[11]
2513 امریکی ڈالر (2015)[11]
2415 امریکی ڈالر (2016)[11]
2898 امریکی ڈالر (2017)[11] 
کل ذخائر 190600000 امریکی ڈالر (1960)[12]
177100000 امریکی ڈالر (1961)[12]
170200000 امریکی ڈالر (1962)[12]
101190000 امریکی ڈالر (1963)[12]
71100000 امریکی ڈالر (1964)[12]
59700000 امریکی ڈالر (1965)[12]
57200000 امریکی ڈالر (1966)[12]
54700000 امریکی ڈالر (1967)[12]
47700000 امریکی ڈالر (1968)[12]
36400000 امریکی ڈالر (1969)[12]
21740000 امریکی ڈالر (1970)[12]
27900000 امریکی ڈالر (1971)[12]
35587443 امریکی ڈالر (1972)[12]
61330424 امریکی ڈالر (1973)[12]
124272496 امریکی ڈالر (1974)[12]
36369221 امریکی ڈالر (1975)[12]
23600000 امریکی ڈالر (1976)[12]
23148588 امریکی ڈالر (1977)[12]
28355858 امریکی ڈالر (1978)[12]
67399668 امریکی ڈالر (1979)[12]
48725508 امریکی ڈالر (1980)[12]
16970337 امریکی ڈالر (1981)[12]
20500000 امریکی ڈالر (1982)[12]
16562817 امریکی ڈالر (1983)[12]
17200000 امریکی ڈالر (1984)[12]
12200000 امریکی ڈالر (1985)[12]
58512231 امریکی ڈالر (1986)[12]
11714186 امریکی ڈالر (1987)[12]
12113456 امریکی ڈالر (1988)[12]
15913141 امریکی ڈالر (1989)[12]
11414226 امریکی ڈالر (1990)[12]
7614304 امریکی ڈالر (1991)[12]
27518806 امریکی ڈالر (1992)[12]
37430695 امریکی ڈالر (1993)[12]
78155912 امریکی ڈالر (1994)[12]
163360977 امریکی ڈالر (1995)[12]
106782702 امریکی ڈالر (1996)[12]
81584278 امریکی ڈالر (1997)[12]
90623304 امریکی ڈالر (1998)[12]
188738166 امریکی ڈالر (1999)[12]
137814239 امریکی ڈالر (2000)[12]
49736273 امریکی ڈالر (2001)[12]
248935516 امریکی ڈالر (2002)[12]
529445722 امریکی ڈالر (2003)[12]
1337996807 امریکی ڈالر (2004)[12]
1868587865 امریکی ڈالر (2005)[12]
1659926271 امریکی ڈالر (2006)[12]
1377921603 امریکی ڈالر (2007)[12]
1399041059 امریکی ڈالر (2008)[12]
1094176603 امریکی ڈالر (2009)[12]
1036243574 امریکی ڈالر (2010)[12]
192529863 امریکی ڈالر (2011)[12]
192632628 امریکی ڈالر (2012)[12]
192957045 امریکی ڈالر (2013)[12]
181457791 امریکی ڈالر (2014)[12]
173516418 امریکی ڈالر (2015)[12]
168284132 امریکی ڈالر (2016)[12]
177933851 امریکی ڈالر (2017)[12] 
اشاریہ انسانی ترقی
اشاریے
0.502 (2017)[13] 
شرح بے روزگاری 15 فیصد (2014)[14] 
دیگر اعداد و شمار
منطقۂ وقت 00  
ٹریفک سمت دائیں [15] 
ڈومین نیم sd.  
آیزو 3166-1 الفا-2 SD 
بین الاقوامی فون کوڈ +249 

تاریخ

1851ء کے بعد سے یورپی اور عثمانی سوداگروں نے ہاتھی دانت کی تلاش میں بالائی نیل کے دریائی علاقوں میں آ مدورفت شروع کی ان کی بے لگام مداخلت کے، قبائلی معاشرے کی نافرمانی اور غلاموں کی تجارت کی نئے علاقوں تک توسیع کی صورت میں دو منفی نتائج تھے۔ خیدِو اسماعیل (1863-79)حکمران تھا۔ برطانوی گورنر جنرل، جنرل گورڈن 1877ء میں تعینات ہوا۔ 1879ء میں خیدِو اسماعیل کو تخت سے اتار دیا گیا اور جنرل گورڈن نے استعفیٰ دے دیا۔ محمد احمد مہدی نیا حکمران بنا۔ سر ہربرٹ کچنر نے جو اس وقت مصری فوج کا سربراہ تھا سوڈان کو پھر سے فتح کرنے کا منصوبہ بنایا اور اس منصوبے کی قیادت کی اس نے 1898ء میں ڈنگولا صو بہ پر پھر سے قبضہ کر لیا۔

دوبارہ فتح کیے گئے علاقوں کی حیثیت کا تعین ایک کنونشن کے تحت جنوری 1899ء میں کیا گیا جس میں مصر اور برطانیہ شامل تھے۔ اس کا ڈرافٹ ایک برطانوی ایجنٹ لارڈ کرومر نی برطانوی حکومت کی پالیسی کے عین مطابق تیار کیا اور اس کا بنیا دی مقصد سوڈان سے بین الاقوامی ادارے اور مصری حکومت کے اختیارات کا اخراج تھا۔ سوڈان کو باقاعدہ طور پر مصر اور برطانیہ کی مشترکہ حکومت کا ماتحت علاقہ بنا دیا گیا۔ 1910ء میں گورنر جنرل کونسل قائم کی گئی۔ دوسری جنگ عظیم کے دوران نئی سیا سی پیش رفت اور قوم پرست احساسات کے آغاز کا مشاہدہ کیا گیا اسماعیل الازہری سوڈانی سیاست دانوں میں سب سے زیا دہ مقبول اور مضبوط ہو گئے تھے۔ سوڈان حکومت نے اپریل 1952ء میں ایک خود حکومتی آئین کا اعلان کیا جنوری 1954ء میں نئی پارلیمنٹ کا اجلاس ہوا جس میں نیشنل پارٹی کے لیڈر اسماعیل الازہری کو وزیر اعظم منتخب کرلیاگیا۔ فوج، پولیس اور سول سروس سے برطانویوں کی واپسی اور سوڈانی لوگوں کی بھرتی کا عمل تیزی سے شروع ہوا۔ پارلیمنٹ نے مزید اقدامات کرکے الازہری کو اس قابل کر دیا کہ انہوں نے یکم جنوری 1956ء کو سوڈان کو ایک آزا د جمہوریہ بنانے کا اعلان کر دیا۔

بیرونی روابط

  • Government of Sudan سرکاری موقع
  • صدر سوڈان
  • ویکیمیڈیا نقشہ نامہ Sudan
  • Sudan سفری راہنما منجانب ویکی سفر
  • "Sudan"۔ کتاب عالمی حقائق۔ سینٹرل انٹیلی جنس ایجنسی۔

  1.   "صفحہ سوڈان في خريطة الشارع المفتوحة"۔ OpenStreetMap۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 اگست 2019۔
  2. باب: 8.3
  3. http://data.uis.unesco.org/Index.aspx?DataSetCode=DEMO_DS
  4. https://www.interpol.int/Member-countries/World — اخذ شدہ بتاریخ: 7 دسمبر 2017 — ناشر: انٹرپول
  5. https://www.opcw.org/about-opcw/member-states/ — اخذ شدہ بتاریخ: 7 دسمبر 2017 — ناشر: تنظیم برائے ممانعت کیمیائی ہتھیار
  6. http://www.unesco.org/eri/cp/ListeMS_Indicators.asp
  7. http://www.upu.int/en/the-upu/member-countries.html — اخذ شدہ بتاریخ: 4 مئی 2019
  8. https://www.itu.int/online/mm/scripts/gensel8 — اخذ شدہ بتاریخ: 4 مئی 2019
  9. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.MKTP.CD?locations=SD — اخذ شدہ بتاریخ: 23 اکتوبر 2018 — ناشر: عالمی بنک
  10. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.PCAP.PP.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 11 جون 2019 — ناشر: عالمی بنک
  11. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.PCAP.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 27 مئی 2019 — ناشر: عالمی بنک
  12. https://data.worldbank.org/indicator/FI.RES.TOTL.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 1 مئی 2019 — ناشر: عالمی بنک
  13. http://hdr.undp.org/en/data — ناشر: United Nations Development Programme
  14. http://data.worldbank.org/indicator/SL.UEM.TOTL.ZS
  15. http://chartsbin.com/view/edr
This article is issued from Wikipedia. The text is licensed under Creative Commons - Attribution - Sharealike. Additional terms may apply for the media files.