سمرقند

سمرقند ازبکستان کا دوسرا سب سے بڑا شہر اور صوبہ سمرقند کا دار الحکومت ہے۔ سمرقند زمانہ قدیم سے چین اور مغرب کے درمیان شاہراہ ریشم کے وسط میں واقع اسلامی تعلیم اور تحقیق کے مرکز کے طور پر جانا جاتا رہا ہے۔ آج بھی شہر میں واقع بی بی خانم مسجد اس کی اہم ترین عمارتوں میں شمار ہوتی ہے۔ "ریگستان" قدیم شہر کے مرکز میں واقع تھا۔ 2,750 سال قدیم اس شہر کو اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے یونیسکو کی جانب سے عالمی ثقافتی ورثہ قرار دیا گیا ہے۔ سمرقند کی روٹیاں بہت مشہور ہیں اور یہاں آنے والے سیاح یہاں سے بڑی تعداد میں روٹیاں بطور تحفہ لے کر جاتے ہیں۔

Samarkand
Samarqand  سمرقند
Clockwise from top:
Registan square, بی بی خانم مسجد, گور امیر, Shah-i-Zinda,

مہر
Samarkand
ازبکستان میں سمرقند
متناسقات: 39°42′N 66°59′E
ملک ازبکستان
ازبکستان کے صوبے سمرقند صوبہ
Settled آٹھویں صدی قبل از مسیح
حکومت
  قسم City Administration
  Hakim (Mayor) Erkinjon Turdimov
رقبہ
  شہر 108 کلو میٹر2 (42 مربع میل)
بلندی 702 میل (2,303 فٹ)
آبادی (2018)
  شہر 530,000
  کثافت 4,900/کلو میٹر2 (13,000/مربع میل)
  میٹرو More 1,000,000
منطقۂ وقت   (UTC+5)
پوسٹ کوڈ 140100
ویب سائٹ www.samshahar.uz

علم اشتقاق

سمرقند کا نام قدیم فارسی کے الفاظ "اسمارا"، بمعنی پتھر یا چٹان اور "قند" بمعنی قلعہ یا قصبہ کا مرکب ہے جس کا مطلب ہے چٹانی قلعہ۔[1]

آبادی

1939ء میں سمرقند کی آبادی 1,34,346 تھی۔ 2008ء کی مردم شماری کے مطابق اس کی آبادی 596,300 ہے۔ زیادہ تر آبادی فارسی بولنے والے تاجکوں پر مشتمل ہے۔ بخارا کے ساتھ ساتھ سمرقند وسطی ایشیا میں تاجکوں کا ایک تاریخی مرکز ہے۔

جڑواں شہر

یہ شہر قدیم خراسان کے عظیم شہر تھے:

دیگر جڑواں شہر

ایوان تصویر

حوالہ جات

  1. Adrian Room۔ Placenames of the World: Origins and Meanings of the Names for 6,600 Countries, Cities, Territories, Natural Features and Historic Sites۔ London: McFarland۔ صفحہ 330۔ آئی ایس بی این 0786422483۔ Samarkand. City, southeastern Uzbekistan. The city derives its name from that of the former Greek city here of Marakanda, captured by Alexander the Great in 329 B.C.. Its own name derives from the Old Persian asmara, "stone", "rock", and Sogdian kand, "fort", "town".
This article is issued from Wikipedia. The text is licensed under Creative Commons - Attribution - Sharealike. Additional terms may apply for the media files.