سؤل

سؤل (انگریزی: Seoul، کوریائی: 서울) جنوبی کوریا کا دار الحکومت اور سب سے بڑا شہر ہے۔ ایک کروڑ سے زائد آبادی کا حامل یہ شہر دنیا کے بڑے شہروں میں شمار ہوتا ہے۔ یہ دنیا کا دوسرا سب سے بڑا شہری علاقہ ہے جو سیول قومی دار الحکومت علاقہ کہلاتا ہے۔ اس میں جنوبی کوریا کی اہم بندرگاہ انچیون اور گیونگی-ڈو کے علاقے بھی شامل ہیں اور اس علاقے کی کل آبادی تقریباً 2 کروڑ 30 لاکھ بنتی ہے۔ جنوبی کوریا کی نصف سے زائد آبادی اس علاقے میں رہتی ہے جس کی ایک چوتھائی دار الحکومت سیول کی باسی ہے۔ یہ ملک کا سیاسی، ثقافتی و اقتصادی مرکز ہے۔ ایک خاص شہر کی حیثیت سے یہ براہ راست قومی حکومت کے زیر انتظام ہے۔

سؤل
Seoul

서울시
جنوبی کوریا کے خصوصی شہر
سؤل خصوصی شہر
서울특별시
  نقل نگاری
  ہنگل رسمِ خط 서울
  ہانجا 서울
  نظر ثانی شدہ رومن سازی Seoul Teukbyeolsi
  McCune–Reischauer Sŏul T'ŭkpyŏlsi
سؤل

پرچم

Seal of Seoul

جنوبی کوریا کا نقشے پر سؤل
ملک  جنوبی کوریا
علاقہ سیول دار الحکومت علاقہ
اضلاع
حکومت
  قسم سؤل میٹروپولیٹن حکومت
میئر کونسل
  میئر Park Won-soon (Minjoo Party of Korea)
  کونسل سؤل میٹروپولیٹن کونسل
  قومی نمائندگی
 - قومی اسمبلی
49 / 300
16.3% (کل نشستیں)
49 / 253
19.4% (حلقہ نشستیں)
رقبہ[1]
  جنوبی کوریا کے خصوصی شہر 605.21 کلو میٹر2 (233.67 مربع میل)
بلندی 38 میل (125 فٹ)
آبادی (October 31, 2014[2])
  جنوبی کوریا کے خصوصی شہر 10,117,909
  کثافت 17,000/کلو میٹر2 (43,000/مربع میل)
  میٹرو 25,620,000
  نام آبادی 서울 사람 (Seoul saram), 서울시민 (Seoul-simin), Seoulite
  لہجہ Gyeonggi
پرندہ Korean magpie
رنگ Seoul Red[3]
پھول Forsythia
رسم الخط Seoul fonts (Han River and Namsan)
بختاور Haechi
نعرہ “Hi Seoul” (Literally "Soul of Asia")
Song "S.E.O.U.L." (Sung by Super Junior & Girls' Generation)
درخت Ginkgo
خام ملکی پیداوار (میٹرو) امریکی ڈالر 845.9 بلین [4][5]
خام ملکی پیداوار فی کس (میٹرو) US$ 34,355 [4][5]
ویب سائٹ seoul.go.kr

شہر دریائے ہان کے طاس پر ملک کے شمال مغربی حصے میں واقع ہے اور شمالی کوریا کی سرحد اس سے صرف 50 کلومیٹر کے فاصلے پر شمال میں واقع ہے۔

ایک اہم مالیاتی و ثقافتی مرکز کی حیثیت سے سیول ایک عالمی شہر کی حیثیت رکھتا ہے۔ یہ شہر 1988ء کے گرمائی اولمپکس اور 2002ء فیفا عالمی کپ کی میزبانی بھی کر چکا ہے۔ 2007ء میں اسے دنیا کا تیسرا اور ایشیا کا سب سے مہنگا شہر قرار دیا گیا۔

شہر کی تقریباً تمام آبادی کوریائی ہے جبکہ چینی اور جاپانی باشندوں کی قلیل تعداد بھی یہی رہائش پزیر ہے۔ غیر ملکی تارکین وطن کی آبادی تیزی سے بڑھتی جا رہی ہے اور اِس وقت وہ کل آبادی کا دو فیصد ہیں۔

شہر میں جرائم کی شرح بہت کم ہے اور یہ ایشیا کے بڑے شہروں میں پرامن ترین شہر سمجھا جاتا ہے۔ یہاں کے دو بڑے مذہب بدھ مت اور مسیحیت ہیں۔

سیول دنیا کی بڑے کاروباری اداروں کا مرکز ہے جس میں سام سنگ، ایل جی اور ہیونڈائی شامل ہیں۔ یہ ایشیا کا اہم ترین کاروباری مرکز ہے۔ حالانکہ سیول ملک کے کل 0.6 فیصد رقبے پر پھیلا ہے لیکن یہ ملک کے کل جی ڈی پی کا 21 فیصد پیدا کرتا ہے۔ اس کا فی کس جی ڈی پی خطے کے بڑے شہروں میں سب سے زیادہ ہے۔

جڑواں شہر

بیرونی روابط

حوالہ جات

  1. http://rcps.egov.go.kr:8081/ageStat.do?command=month
  2. "Color"۔
  3. "Global city GDP 2014"۔ Brookings Institution۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 18 نومبر 2014۔
  4. This includes Incheon and Gyeonggi Province
This article is issued from Wikipedia. The text is licensed under Creative Commons - Attribution - Sharealike. Additional terms may apply for the media files.