بھوٹان

بھوٹان (Bhutan) (تلفظ: /bˈtɑːn/; زونگکھا འབྲུག་ཡུལ Dru Ü، با ابجدیہ: [ʈʂɦu y:][16] جنوبی ایشیا کا ایک چھوٹا اور اہم ملک ہے۔ یہ ملک چین اور بھارت کے درمیان میں واقع ہے۔ اس ملک کا مقامی نام درک یو ہے، جس کا مطلب ہوتا ہے 'ڈریگن کا ملک۔ یہ ملک بنیادی طور پر پہاڑی علاقے پر مشتمل ہے صرف جنوبی حصہ میں تھوڑی سی ہموار زمین ہے۔ ثقافتی اور مذہبی طور سے تبت سے منسلک ہے، لیکن جغرافیائی اور سیاسی حالات کے پیش نظر اس وقت یہ ملک بھارت کے قریب ہے۔

  

بھوٹان
بھوٹان
پرچم
بھوٹان
نشان

 

ترانہ:تھنڈر ڈریگن کی مملکت  
زمین و آبادی
متناسقات 27.45°N 90.5°E / 27.45; 90.5   [1]
رقبہ 38394.0 مربع کلومیٹر  
دارالحکومت تھمپو  
سرکاری زبان زونگکھا  
آبادی 753947 (2013)[2] 
اوسط عمر
59.899 سال (1999)[3]
60.758 سال (2000)[3]
61.625 سال (2001)[3]
62.484 سال (2002)[3]
63.322 سال (2003)[3]
64.126 سال (2004)[3]
64.882 سال (2005)[3]
65.578 سال (2006)[3]
66.214 سال (2007)[3]
66.792 سال (2008)[3]
67.315 سال (2009)[3]
67.79 سال (2010)[3]
68.227 سال (2011)[3]
68.639 سال (2012)[3]
69.038 سال (2013)[3]
69.43 سال (2014)[3]
69.817 سال (2015)[3]
70.197 سال (2016)[3] 
حکمران
طرز حکمرانی آئینی بادشاہت  
بادشاہ بھوٹان   جگمے کھیسر نامگیال وانگچوک (6 نومبر 2008–) 
وزیر اعظم بھوٹان   لوتے شیرنگ  
قیام اور اقتدار
تاریخ
یوم تاسیس 17 دسمبر 1907،  1949 
عمر کی حدبندیاں
شادی کی کم از کم عمر 18 سال  
الحاق اور رکنیت
مشترکہ سرحدیں
عوامی جمہوریہ چین (Bhutan–China border )
بھارت (بھارت بھوٹان سرحد ) 
خام ملکی پیداوار
  کل
2511852941.17647 امریکی ڈالر (2017)[9] 
  فی کس 1502.523 بین الاقوامی ڈالر (1990)[10] 
جی ڈی پی تخمینہ
  فی کس 331 امریکی ڈالر (1980)[11]
348 امریکی ڈالر (1981)[11]
345 امریکی ڈالر (1982)[11]
374 امریکی ڈالر (1983)[11]
373 امریکی ڈالر (1984)[11]
368 امریکی ڈالر (1985)[11]
416 امریکی ڈالر (1986)[11]
505 امریکی ڈالر (1987)[11]
548 امریکی ڈالر (1988)[11]
520 امریکی ڈالر (1989)[11]
557 امریکی ڈالر (1990)[11]
465 امریکی ڈالر (1991)[11]
471 امریکی ڈالر (1992)[11]
449 امریکی ڈالر (1993)[11]
524 امریکی ڈالر (1994)[11]
588 امریکی ڈالر (1995)[11]
609 امریکی ڈالر (1996)[11]
692 امریکی ڈالر (1997)[11]
695 امریکی ڈالر (1998)[11]
751 امریکی ڈالر (1999)[11]
765 امریکی ڈالر (2000)[11]
807 امریکی ڈالر (2001)[11]
885 امریکی ڈالر (2002)[11]
997 امریکی ڈالر (2003)[11]
1097 امریکی ڈالر (2004)[11]
1247 امریکی ڈالر (2005)[11]
1335 امریکی ڈالر (2006)[11]
1741 امریکی ڈالر (2007)[11]
1795 امریکی ڈالر (2008)[11]
1770 امریکی ڈالر (2009)[11]
2178 امریکی ڈالر (2010)[11]
2458 امریکی ڈالر (2011)[11]
2422 امریکی ڈالر (2012)[11]
2350 امریکی ڈالر (2013)[11]
2522 امریکی ڈالر (2014)[11]
2616 امریکی ڈالر (2015)[11]
2782 امریکی ڈالر (2016)[11]
3130 امریکی ڈالر (2017)[11] 
کل ذخائر 35480122 امریکی ڈالر (1983)[12]
43047367 امریکی ڈالر (1984)[12]
53322920 امریکی ڈالر (1985)[12]
61001773 امریکی ڈالر (1986)[12]
86949129 امریکی ڈالر (1987)[12]
95679182 امریکی ڈالر (1988)[12]
90027655 امریکی ڈالر (1989)[12]
88834210 امریکی ڈالر (1990)[12]
101300000 امریکی ڈالر (1991)[12]
85120004 امریکی ڈالر (1992)[12]
97959126 امریکی ڈالر (1993)[12]
121399997 امریکی ڈالر (1994)[12]
130457701 امریکی ڈالر (1995)[12]
190071378 امریکی ڈالر (1996)[12]
188716779 امریکی ڈالر (1997)[12]
256803120 امریکی ڈالر (1998)[12]
292285632 امریکی ڈالر (1999)[12]
317632408 امریکی ڈالر (2000)[12]
323362178 امریکی ڈالر (2001)[12]
354949469 امریکی ڈالر (2002)[12]
366596388 امریکی ڈالر (2003)[12]
398620017 امریکی ڈالر (2004)[12]
467426180 امریکی ڈالر (2005)[12]
545324752 امریکی ڈالر (2006)[12]
699049472 امریکی ڈالر (2007)[12]
764803110 امریکی ڈالر (2008)[12]
890893412 امریکی ڈالر (2009)[12]
1002139066 امریکی ڈالر (2010)[12]
789643782 امریکی ڈالر (2011)[12]
954678385 امریکی ڈالر (2012)[12]
991306682 امریکی ڈالر (2013)[12]
1245086703 امریکی ڈالر (2014)[12]
1103179124 امریکی ڈالر (2015)[12]
1127277313 امریکی ڈالر (2016)[12]
1206238190 امریکی ڈالر (2017)[12] 
اشاریہ انسانی ترقی
اشاریے
0.612 (2017)[13] 
شرح بے روزگاری 3 فیصد (2014)[14] 
دیگر اعداد و شمار
منطقۂ وقت متناسق عالمی وقت+06:00  
ٹریفک سمت بائیں [15] 
ڈومین نیم bt.  
سرکاری ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ 
آیزو 3166-1 الفا-2 BT 
بین الاقوامی فون کوڈ +975 

جغرافیہ

بھٹان کا پہاڑ و میدانی نقشہ ــ
بھٹان کا موسمی نقشہ ــ
ھا وادی مغربی بھٹان میں ــ
گھنگکر ببویسم ــ

بھوٹان ایک پہاڑی ملک ہے ــ جو چین اور بھارت کے درمیان میں پایا جاتا ہے ــ

نام

کچھ لوگوں کے مطابق بھوٹان سنسکرت کے لفظ بھو-ات تھان سے بنا ہے جس کا لفظی مطلب ہے اونچی زمین۔ کچھ کے مطابق یہ بھوت - انت (یعنی تبت کا خاتمہ) کی بگڑی شکل ہے۔ یہاں کے باشندے بھوٹان کو درک - یو (ڈریگن کا ملک) اور اس کے باشندوں کو درپکا کہتے ہیں۔ اس کے علاوہ بھی بھوٹان کے کئی اور سابق نام بھی ہیں۔

تاریخ

سترھویں صدی کے آخر میں بھوٹان میں بدھ لوگوں کی اکثریت تھی۔ 1865 میں برطانیہ اور بھوٹان کے درمیان میں سنچل معاہدہ پر دستخط ہوا، جس کے تحت بھوٹان کی کچھ سرحدی زمین کے حصہ کے بدلے کچھ سالانہ فنڈنگ ​​کے معاہدے کیے گئے۔ برطانوی اثرات کے تحت 1907 میں وہاں بادشاہی نظام کی تشکیل ہوئی۔ تین سال بعد ایک اور معاہدہ ہوا، جس کے تحت برطانوی اس بات پر راضی ہوئے کہ وہ بھوٹان کے اندرونی معاملات میں دخل اندازی نہیں کریں گے لیکن بھوٹان کی خارجہ پالیسی برطانیہ کی طرف سے طے کی جائے گی۔ بعد میں 1947 کے بعد یہی کردار بھارت کو برطانیہ کی طرف سے ملا۔ دو سال بعد 1949 میں بھارت بھوٹان معاہدے کے تحت بھارت نے بھوٹان کی وہ ساری زمین اسے لوٹا دی جو انگریزوں کے قبضے میں تھی۔ اس معاہدے کے تحت بھارت کا بھوٹان کی خارجہ پالیسی اور دفاعی پالیسی میں کافی اہم کردار رہا۔

حوالہ جات

  1.   "صفحہ بھوٹان في خريطة الشارع المفتوحة"۔ OpenStreetMap۔ اخذ شدہ بتاریخ 5 اگست 2019۔
  2. ناشر: عالمی بنک
  3. http://data.uis.unesco.org/Index.aspx?DataSetCode=DEMO_DS
  4. https://www.interpol.int/Member-countries/World — اخذ شدہ بتاریخ: 7 دسمبر 2017 — ناشر: انٹرپول
  5. https://www.opcw.org/about-opcw/member-states/ — اخذ شدہ بتاریخ: 7 دسمبر 2017 — ناشر: تنظیم برائے ممانعت کیمیائی ہتھیار
  6. http://www.unesco.org/eri/cp/ListeMS_Indicators.asp
  7. http://www.upu.int/en/the-upu/member-countries.html — اخذ شدہ بتاریخ: 4 مئی 2019
  8. https://www.itu.int/online/mm/scripts/gensel8 — اخذ شدہ بتاریخ: 4 مئی 2019
  9. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.MKTP.CD?locations=BT — اخذ شدہ بتاریخ: 22 اکتوبر 2018 — ناشر: عالمی بنک
  10. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.PCAP.PP.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 11 جون 2019 — ناشر: عالمی بنک
  11. https://data.worldbank.org/indicator/NY.GDP.PCAP.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 27 مئی 2019 — ناشر: عالمی بنک
  12. https://data.worldbank.org/indicator/FI.RES.TOTL.CD — اخذ شدہ بتاریخ: 1 مئی 2019 — ناشر: عالمی بنک
  13. http://hdr.undp.org/en/data — ناشر: United Nations Development Programme
  14. http://data.worldbank.org/indicator/SL.UEM.TOTL.ZS
  15. http://chartsbin.com/view/edr
  16. George van Driem۔ Dzongkha = Rdoṅ-kha۔ Leiden: Research School, CNWS۔ صفحہ 478۔ آئی ایس بی این 90-5789-002-X۔
 یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔
This article is issued from Wikipedia. The text is licensed under Creative Commons - Attribution - Sharealike. Additional terms may apply for the media files.