ابخازيا

ابخازیا (abkhazia) (ابخاز: Аҧсны́) بحیرہ اسود اور قفقاز کے جنوب مغربی سمت کے مشرقی ساحل پر ایک متنازع علاقہ ہے۔ ابخازیا خود کو ایک آزاد ریاست جمہوریہ ابخازیا کہتا ہے۔ [6][7][8][9]

جمہوریہ ابخازیا
Republic of Abkhazia

Аҧсны Аҳәынҭқарра (Аҧсны) (ابخاز)
Aphsny Axwynthqarra (Aphsny)
Республика Абхазия (Абхазия) (روسی)
Respublika Abkhaziya (Abkhaziya)
აფხაზეთი (جارجیائی)
Apkhazeti
پرچم Emblem
ترانہ: Аиааира (ابخاز)
("Aiaaira")
("فتح")
ابخازيا (نارنجی), اور جارجیا (سرمئی)
دار الحکومت
اور سب سے بڑا شہر
سخومی
دفتری زبانیں ابخاز1 اور روسی
نام آبادی ابخاز, ابخازین
حکومت وحدانی ریاست جمہوریہ
 صدر
Alexander Ankvab
Leonid Lakerbaia
مقننہ ابخازیا عوامی ایوان
جارجیا اور سوویت اتحاد سے جزوی طور پر تسلیم شدہ[1][2][3]
 سوویت دور کے تمام قوانین اور معاہدوں میں سے جارجیا فسخ
20 جون 1990
 خودمختاری کا اعلان2
25 اگست 1990
 جارجیا اعلان آزادی
9 اپریل 1991
 سوویت اتحاد کی تاریخ (1985–1991)
26 دسمبر 1991
 ابخازیا کا آئین
26 نومبر 1994
 آئینی ریفرنڈم
3 اکتوبر 1999
 ریاست کی آزادی کے ایکٹ3
12 اکتوبر 1999
 ابخازیا بین الاقوامی شناخت4
26 اگست 2008
رقبہ
 کل
8,660 کلومیٹر2 (3,340 مربع میل)
آبادی
 2011 مردم شماری
240,705 (متنازع)
 کثافت
28/کلو میٹر2 (72.5/مربع میل)
خام ملکی پیداوار (برائے نام) 2009 تخمینہ
 کل
$500 ملین[4]
کرنسی ابخازی اپسار, روسی روبل5 (RUB)
منطقۂ وقت ماسکو وقت (متناسق عالمی وقت+3)
ڈرائیونگ سمت دائیں
کالنگ کوڈ +7-840/940[5]

سوویت یونین میں ابخازيا

فہرست متعلقہ مضامین ابخازيا

فہرست متعلقہ مضامین ابخازيا

حوالہ جات

  1. Site programming: Denis Merkushev۔ "Акт о государственной независимости Республики Абхазия"۔ Abkhaziagov.org۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 جون 2010۔
  2. "Апсныпресс – государственное информационное агенство Республики Абхазия"۔ Apsnypress.info۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 جون 2010۔
  3. "Abkhazia: Review of Events for the Year 1996"۔ UNPO۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 جون 2010۔
  4. "Abkhazia calculated GDP – News"۔ GeorgiaTimes.info۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 22 ستمبر 2011۔
  5. "ابخازیا جارجیا فون کے کوڈ سے دستیاب"۔ Today.Az۔ مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 جنوری 2010۔
  6. Art. 1 of the Constitution of the Republic of Abkhazia
  7. Olga Oliker, Thomas S. Szayna. Faultlines of Conflict in Central Asia and the South Caucasus: Implications for the U.S. Army. Rand Corporation, 2003, ISBN 978-0-8330-3260-7.
  8. Abkhazia: ten years on. By Rachel Clogg, Conciliation Resources, 2001.
  9. Emmanuel Karagiannis. Energy and Security in the قفقاز. Routledge, 2002. ISBN 978-0-7007-1481-0.
This article is issued from Wikipedia. The text is licensed under Creative Commons - Attribution - Sharealike. Additional terms may apply for the media files.