حمید الدین سیالوی

پیر حمید الدین سیالوی سیال شریف، سرگودھا، پاکستان کے ایک روحانی رہنما اور سیاست دان تھے۔[1] ان کا تعلق بریلوی مکتب فکر سے تھا۔

حمید الدین سیالوی
رکن ایوان بالا پاکستان
مدت منصب
1988 – 1991
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1936  
سیال شریف  
تاریخ وفات 17 ستمبر 2020 (8384 سال) 
شہریت پاکستان  
جماعت پاکستان مسلم لیگ (ن)  
رشتے دار قمر الدین سیالوی (والد)
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  

سیالوی ایوان بالا پاکستان کے مارچ 1988ء تا مارچ 1991ء تک رکن رہے۔[2]

تعلیم و تعلم

ان کی پیدائش 1936ء میں سیال شریف کے مذہبی خاندان میں ہوئی اور ابتدائی تعلیم دار العلوم ضیا شمس الاسلام میں ہوئی۔ بعد ازاں، انھوں نے وعظ اور دار العلوم دینیہ میں تدریس کا کام شروع کر دیا، جہاں یہ اگلی دو دہائیوں تک تدریس سے وابستہ رہے۔[2]

عملی زندگی

پیر حمید الدین سیالوی سرگودھا کے ایک نواحی گاؤں سیال شریف کے چشتی صوفی سلسلے سے تعلق رکھنے والے مذہبی سکالر اور صوفی خواجہ قمر الدین سیالوی کے بیٹے ہیں۔ وہ 1988ء سے لے کر 1993ء تک سینیٹ کے ارکان رہ چکے ہیں۔

خواجہ قمر الدین سیالوی برصغیر اور پھر تقسیم کے بعد پاکستان میں تحریکِ ختمِ نبوت کے بانیوں میں شمار ہوتے ہیں۔

تجزیہ کار عامر رانا کے مطابق انھوں نے جمیعت المشائخ نامی ایک سیاسی جماعت کی بنیاد بھی رکھی جو ہمیشہ اپنے دور کے حکومتوں کی حامی رہی ہے۔

وفات

خواجہ محمد حمیدالدین سیالوی 17 ستمبر 2020ء بروز جمعرات وفات پاگئے، ان کی عمر 84 برس تھی۔ 18 ستمبر کو ان کا جنازہ سیال شریف میں ادا کیا گیا۔[3]

اولاد

  • ضیاء الحق سیالوی
  • قاسم سیالوی ( پی ٹی آئی کے رہنما ہیں اور وہ پارٹی ٹکٹ پر الیکشن لڑ چکے ہیں)

حوالہ جات

  1. Dawn.com (28 نومبر 2017). "Sargodha-based spiritual leader to decide political future of 14 PML-N legislators". 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 24 جولا‎ئی 2018.
  2. "Senate of Pakistan". www.senate.gov.pk. 25 دسمبر 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 24 جولا‎ئی 2018.
  3. "حضرت خواجہ حمید الدین سیالوی انتقال فرما گئے، نماز جنازہ آج سیال شریف میں ہو گی".
  1. https://sialsharif.org/golden-chain.html
This article is issued from Wikipedia. The text is licensed under Creative Commons - Attribution - Sharealike. Additional terms may apply for the media files.